فری لانسر کی حیثیت سے انٹرنیٹ پر اپنے کرئیر کا آغاز کریں

ہنر مند افراد اور انگریزی زبان پر عبور رکھنے والے ،انٹر نیٹ سے ڈالر کمانے کےلئے موجود بے شمار مواقعوں سے فائدہ اُٹھائیں

freelance

My this article was published in Daily Ausaf Sunday Magazine on 24 Nov 2013.

جب انٹرنیٹ سے پیسے کمانے کی بات ہوتی ہے تو بہت سے لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ بس انٹرنیٹ پر دو گھنٹے لگائیں گے اور پھر ڈالروں کی برسات ہو جائے گی ، سچ تو یہ ہے کہ ڈالروں سے کھیلنے کے خواب کو حقیقت میں بدلنے کےلئے بہت سخت محنت کی ضرورت ہوتی ہے۔ وہ لوگ جنہیں سخت محنت کرنے میں تکلیف محسوس نہیں ہوتی انہوں نے بے روزگاری سے نجات پا لی ہے اور وہ اس وقت انٹرنیٹ پر آن لائن کام کر کے سے اچھے خاصے پیسے کما رہے ہیں ۔ انٹرنیٹ سے پیسے کمانے کے ان گنت طریقے ہیں، مثلاً ، فری لانسنگ ، گوگل ایڈ سنس، بلاگنگ ، ایفیلی ایٹ مارکیٹنگ (Affiliate Marketing)، ڈیٹاانٹری، میڈیکل ٹرانس کرپشن (Medical Transcription)، ای شاپ ، آن لائن قرآن کی ٹیوشن یا کوچنگ،، سوشل میڈیا مارکیٹنگ، ویب سائٹ اور فیس بک لائیک پیج کی خرید و فروخت،یوٹیو ب ، ٹویٹر، فوٹو گرافی ، اپنی ای بک (E-Book) بیچ کر ، بیک لنکس(Back Links)اور ڈومین نیم فلپنگ(Domain Name Flipping)وغیرہ ۔ اس کے علاوہ بہت سی ایسی ویب سائٹ بھی ہیں جو مائیکرو جابز (Micro Jobs)کی سہولت مہیا کر تی ہیں ۔اس میں سب سے مشہور ویب سائٹ fiverr.com ہے ۔اس ویب سائٹ پر آپ پانچ ڈالر کے عوض چھوٹے کام یا کوئی منفرد پیش کش کر کے خریدار کو متوجہ کر سکتے ہیں۔ پاکستان میں بہت سے نوجوانوں نے اس ویب سائٹ پر دلچسپ پیش کش کرکے سینکڑوں ڈالر کمائے ہیں ، اس ویب سائٹ پر جو کام آپ پانچ ڈالر میں کرتے ہیں ، اس میں سے ایک ڈالر ویب سائٹ والے اپنی کمیشن رکھ لیتے ہیں۔ گذ شتہ سنڈے میگزین میں آپ نے بلاگنگ اور ایڈسنس کے ذریعے پیسے کمانے کے بارے میں پڑھا ۔ آج آپ کو فری لانسنگ کے ذریعے انٹرنیٹ سے ارننگ کے بارے میں بتایا جائے گا۔
فر ی لانس (Freelance)کی حیثیت سے کام کرنے والے کو فری لانسر کہتے ہیں ۔ وہ لوگ جو اپنے صلاحیتیو ں اور مہارت کی بنیاد پر کسی کمپنی یا فر د کے ساتھ معاوضہ طے کر کے مخصوص مدت یا پراجیکٹ کی بنیا د پر خدمات مہیا کریں انہیں ہم فر ی لانسر کہتے ہیں ،انٹرنیٹ سے حاصل ہونے والا بیشتر کام گھر بیٹھے مکمل کیا جاتا ہے ۔ اس وقت انٹرنیٹ پر فری لانسرز کےلئے کام کے بہت زیادہ مواقع موجود ہیں ۔ کوئی بھی فرد، چاہے وہ مرد ہو یا عورت اور اس میں عمر کی بھی کوئی قید نہیں۔ وہ اپنے ہنر (Skill)کی بنیا د پر کسی بھی فری لانس ویب سائیٹ سے کام حاصل کر سکتا ہے ۔اگر آپ بے روزگار ہیں یا جاب کے بعد بھی آپ کے پاس کافی فارغ وقت ہوتا ہے یا وہ گھریلو خواتین جو کسی آفس میں جا کر کام کرنا پسند نہیں کرتیں اور ان کی انگلش بھی اچھی ہے تو وہ بھی فری لانسربن کر اچھے پیسے کما سکتی ہیں ، انٹرنیٹ پر بحیثیت فری لانسر کام کرنے کے بے شمار مواقع موجود ہیں ، مثال کے طور پر آپ آرٹیکل یا کنٹیسٹ رائیٹنگ (Article/Contest Writing) ، ترجمہ نگاری (Translation) ویب سائٹ ڈیزاننگ، سافٹ وئیر ڈیویلپمنٹ ،سیلز ، مارکیٹنگ اورملٹی میڈیا اور گرافک ڈیزائننگ اور ڈیٹا انٹری وغیرہ۔ وہ افراد جن کے ہاتھ میں کوئی خاص ہنر نہیں ہے لیکن انہیں انگریزی زبان پر مہارت حاصل ہے ، ان کے لئے آرٹیکل رائٹنگ کے شعبہ میں بے شمار مواقع ہیں ،مثال کے طور پر وہ ایڈیٹنگ اور پروف ریڈنگ ، ورڈ پروسیسنگ ، ویب کونٹینٹ رائیٹنگ ، ای بک رائٹنگ ، ری رائٹنگ ، ٹیکنیکل رائٹنگ اور اکیڈمک رائٹرکے طور پر کام کر سکتے ہیں ۔وہ افراد جنہیں کورل ڈرا (CorelDraw)، فوٹوشاپ (Adobe Photoshop) اور ویڈیو ایڈیٹنگ کے سافٹ وئیرز میں کام کرنا آتا ہے تو آپ یہاں سے بہت اچھی آمدن کر سکتے ہیں ۔
فری لانس کام حاصل کرنے کے لئے آپ ان ویب سائٹس پر اپنا مفت اکاؤ نٹ بنا کر کام کا آغاز کر سکتے ہیں ۔www.elance.com, www.odesk.com, www.guru.com, www.freelancer.com, www.99designs.com, www.microworkers.com یہ وہ ویب سائیٹس ہیں جن پرآپ اعتماد کر سکتے ہیں۔ یہاں پر دھوکہ دہی کا بہت کم چانس ہوتا ہے اور آپ کو کام مکمل کرنے کے بعد مقررہ وقت پر پیسے مل جاتے ہیں اگرآپ فری لانسر کی حیثیت سے کام کرنا چاہتے ہیں توکسی بھی ویب سائیٹ پر اکاﺅنٹ بنانے سے پہلے ان کے کام کرنے کے طریقہ کار اور قواعدوضوابط کا بغور مطالعہ کرنے کے بعد اکاﺅنٹ بنائیں۔ خاص طور پر ان کے رقم کی ادائیگی کے طریقہ کارکو ضرور پڑھیںپھر اس کے بعد اللہ کا نام لے کرکسی ایک ویب سائٹ پر اکاﺅنٹ بنا لیں۔ فری لانسز کے لئے کام مہیا کرنے والی تمام ویب سائٹس پر مفت اور پریمئم دو اقسام کے اکاﺅنٹ بنانے کی سہولت موجود ہوتی ہے۔ فری لانسر کی حیثیت سے کسی بھی ویب سائٹ پر اکاﺅنٹ بناتے وقت مفت کی سہولت سے فائدہ اٹھائیں، ماہانہ فیس کی ادائیگی والا پریمئم اکاﺅنٹ بنانے کے چکر میں نہ پڑیں۔ ان فری لانس ویب سائیٹس پر اکا ﺅنٹ بنانا بھی ایک آرٹ ہے۔ جب بھی کسی ایسی ویب سائیٹ پر اکاﺅنٹ بنانا ہو تو ہمیشہ اس نام سے اکاﺅنٹ بنائیں جو آپ کے شناختی کارڈ پر درج ہے۔ اپنی تمام مہارتوں اور صلاحیتوں کو اپنی پروفائل میں اچھے انداز سے ضرور لکھیں۔ کوئی ایسا دعویٰ نہ کریں جو غلط ہو اور نہ ہی لمبی لمبی چھوڑیں، بس اتنا ہی لکھیں جو آپ حقیقت میں ہیں۔
اوپر میں نے جو چند فری لانس ویب سائیٹس کے نام لکھے ہیں ، ہزاروںپاکستانی یہاں سے ماہانہ لاکھوں روپےکما رہے ہیں۔ اگر آپ اکاﺅنٹ بنانے سے پہلے کسی تجربہ کار سے مشورہ کریں گے کہ کس ویب سائٹ پر اکاﺅنٹ بنانا بہتر رہے گا توضروری نہیں کہ وہ جو مشورہ دے آپ آنکھیں بند کر کے اس پر عمل شروع کر دیں۔ انٹر نیٹ کی دنیا بہت وسیع ہے اس لیئے کوئی بھی کام شروع کرنے سے پہلے اس سے متعلق ایک بار گوگل پر اچھی طرح سرچ ضرور کر لیں۔وہ افراد جو فری لانس کام حاصل کرنے کے لئے زیادہ ٹینشن میں نہیں پڑنا چاہتے ان کے لئے بہتر یہ ہے کہ وہ ای لانس(Elance) یا اوڈیسک (oDesk) پر اکاﺅنٹ بنا لیں۔ان دونوں ویب سائیٹس کے کام کرنے کا طریقہ کار تقریباً ایک جیسا ہی ہے۔ زیادہ بہتر یہ ہے کہ آپ اوڈیسک سے کام کا آغاز کریں۔ جب آپ اپنا اکاﺅنٹ بنا لیں تو سب پہلے ان کے قواعدوضوابط کا مطالعہ کرنے کے بعد ا گرآپ کو اپنی صلاحیتوں پر اعتماد ہے تو اپنے شعبہ سے متعلق ٹیسٹ کا انتخاب کرکے اپنی مہارت کا ٹیسٹ دیں۔ اس ٹیسٹ کی کوئی فیس نہیں ہوتی اور اگر آپ اپنے شعبہ سے متعلق ٹیسٹ میں اچھے نمبر حاصل کر لیتے ہیں یا صرف پاس بھی کر لیتے ہیں تو اس سے آپ کے اکاﺅنٹ کی ویلیو بڑھ جاتی ہے۔اس کے علاوہ ان کا ایک انٹری لیول کا ٹیسٹ بھی ہوتا ہے جس میں آپ سے اوڈیسک پر کام کرنے کے طریقہ کار اور قواعدوضوابط سے متعلق سوال پوچھے جاتے ہیں اس کا مقصد یہ ہوتا ہے کہ آپ کو معلوم ہو جائے کہ آپ کس حد تک با خبر ہیں۔اگر آپ بر وقت تیاری کر کے ان ٹیسٹ میں پاس ہو جاتے ہیں تو جن لوگوں نے آپ سے کام کروانا ہوتا ہے وہ آپ کو ترجیح دیں گے، ویسے انٹرنیٹ پر ان ٹیسٹ کو کلیئر کرنے کا شارٹ کٹ بھی موجود ہے لیکن بہتر یہی ہے کہ ابھی آپ شارٹ کٹ کے چکر میں نہ پڑیں اور اپنی قابلیت کی بنیاد پر ٹیسٹ کلیئر کریں۔
فری لانس ویب سائیٹس سے کام حاصل کرنے کے لئے بولی (Bid)لگانی پڑتی ہے۔ ہوتا یوں ہے کہ کوئی بھی فرد یا کمپنی جس نے کوئی کام کروانا ہوتا ہے وہ اس کام کی تفصیل فری لانس ویب سائیٹ پر پوسٹ کر دیتا ہے اور جو لوگ یہ کام کر سکتے ہیں وہ اس پر بولی لگاتے ہیں کہ ہم یہ کام اتنے ڈالرز میں کر دیں گے اور پھر جس کی پروفائل اور ریٹ کام کروانے والے کی سمجھ میں آتا ہے وہ یہ کام اسے دے دیتا ہے۔ عام طور پراوڈیسک پر ہر شعبہ میں دو طرح کی جاب دستیاب ہوتی ہیںایک وہ جس میں پراجیکٹ کا بجٹ بتا دیا جاتا ہے اور جاب کی دوسری قسم میںفی گھنٹہ کے حساب سے کام کرنے کا معاوضہ دیا جاتا ہے۔ دونوں اقسام کے پراجیکٹ کو حاصل کرنے کے لئے بولی ہی لگانی پڑتی ہے ۔ اب میں یہا ں پر ایک چھوٹے سے مسئلہ کی وضاحت کر دوں کہ جس پراجیکٹ میں فی گھنٹہ کے حساب سے ادائیگی ہوتی ہے ، oDesk والے اس پراجیکٹ کے معاوضہ کی ادائیگی کی ذمہ داری لےتے ہیں ، جبکہ جو بجٹ بیسڈ پراجیکٹ ہوتے ہیں ان کی پیمنٹ کی گارنٹی نہیں دیتے ، اب اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ آپ بجٹ والے پراجیکٹ پکڑیں ہی نہ ، یہ قانون انہوں نے اس لئے بنایا ہے کہ اگر کوئی گاہک کام کروانے کے بعد ادائیگی نہیں کرتا تو ان کی ریپوٹیشن خراب نہ ہو۔
ہر قسم کے پراجیکٹ کو حاصل کرنے کے لئے فری لانسرزکے درمیان بہت سخت مقابلہ ہوتا ہے۔ وہ لوگ جو بے روزگار ہیںیا وہ فری لانسر جنہوںنے نیا نیا اکاﺅنٹ بنایا ہوتا ہے وہ بہت کم معاوضہ پر کام کرنے کی بولی لگا کر کام حاصل کرنے میں کامیاب ہو جاتے ہیں۔اگر آپ نے بھی یہ طریقہ اختیار کرنا ہے تو صرف آغاز میں کریں لیکن جب آ پ کے اکاﺅنٹ کی تھوڑی ویلیو بن جائے توکبھی بھی بہت کم معاوضہ پر کام کرنے کی پیشکش نہ کریں۔بس جو مناسب اور جائز معاوضہ بنتا ہو وہ ہی طلب کریں۔اس سارے کام میں صرف ایک بات تکلیف دہ ہے کہ شروع شروع میں پراجیکٹ حاصل کرنے کے لئے کافی تگ ودو کرناپڑتی ہے اور اکثربولی لگانے کے بعد طویل انتظار کے صبر آزما لمحات سے گزرنا پڑتا ہے۔کچھ پتا نہیں ہوتا کہ کام ملے گا بھی کہ نہیں اوریہ وہ مقام ہے جہاں پر فری لانسر بہت سخت اور اعصاب شکن امتحان سے گزرتا ہے۔بس جس نے ہمت نہ ہاری ،صبرکا دامن ہاتھ سے نہ چھوڑا اور اللہ کی رحمت سے مایوس نہ ہوا ،پھروہی ڈالروں سے کھیلتا ہے۔
کسی بھی پراجیکٹ کو حاصل کرنے کے لئے بولی لگاتے وقت ہمیشہ ان اصولوں کو مدنظر رکھیں ۔ہر پراجیکٹ پر بولی لگانے سے پہلے اس پراجیکٹ کے ساتھ دی گئی ہدایات کا بغور مطالعہ کر لیں کہ کیا آپ یہ کام آسانی کے ساتھ اور بروقت مکمل کرسکتے ہیں۔ اگر آپ کوئی پراجیکٹ حاصل کرنے کے بعد اسے وقت مقررہ پر مکمل نہیں کرتے تو کلائنٹ آپ کے اکاﺅنٹ پر جو کومنٹ کرے گا اس سے آپ کی ریپوٹیشن خراب ہو جائے گی اور کوئی بھی دوسرا کلائنٹ آپ سے کام کروانے میں ہچکچائے گا۔ اوڈیسک پر دھوکہ دہی کے واقعات کی تعداد بہت ہی کم ہے پھر بھی یہ احتیاط ملحوظ خاطر رکھیں کہ جس کمپنی یا فرد نے کوئی جاب پوسٹ کی ہو اس کی پروفائل کا اچھی طرح جائزہ لے لیں کہ اس کا ادائیگی کرنے کا ریکارڈ کیسا ہے، لوگوں نے اس کے متعلق کس قسم کے خیالات کا اظہار کیا ہے۔ کسی بھی گاہک کی پروفائل سے یہ اندازہ ہو جاتا ہے کہ وہ اب تک کتنی پیمنٹ کر چکا ہے۔ اس لئے وہ کلائنٹ جنہوں نے نیا نیا اکاﺅنٹ بنایا ہو ان کا کام کرنے سے پہلے اچھی طرح تسلی کر لیں اوراس کے علاوہ انڈین کلائنٹ کا کام کرنے سے بھی پرہیز ہی کریں تو بہتر ہے۔میری دعا ہے کہ آپ جلد ہی کام حاصل کرنے میں کامیاب ہو جائیں تو جب آپ کوئی کام حاصل کر تے وقت جب آپ کسی پراجیکٹ پر بولی لگا رہے ہوں تو گاہک سے کچھ نہ کچھ ایڈوانس ضرور طلب کریں کم از کم پراجیکٹ کا بیس فیصد تو ایڈوانس ضرور لیں ۔ بہت کم لوگ ایسے ہوتے ہیں جو ایڈوانس کے لئے رضامند نہ ہوں۔ کلائنٹ آپ کو جو ایڈوانس ادائیگی کرتا ہے وہ رقم آپ کے اکاﺅنٹ میں منتقل تو ہو جاتی ہے لیکن آپ اس رقم کو کام مکمل کرنے کے بعد ہی نکال سکتے ہیں۔ آپ کو جن کلائنٹ کے ساتھ کام کرنے کا موقع ملے ان سے رابطہ کے دوران آداب گفتگو کا خاص خیال رکھیںآپ کا اچھا اخلاق کلا ئنٹ کے ساتھ مضبوط تعلق کا باعث بنتا ہے۔فری لانس کام کے حصول کے لئے ابتدا میں آپ کو ہر قدم پر رہنمائی کی ضرورت محسوس ہوگی اور انٹرنیٹ پر کسی کے پاس اتنا فارغ وقت نہیں ہوتا کہ مفت میں آپکو تربیت فراہم کرے اس وقت پاکستان میں جو لوگ فری لانس اکاﺅنٹ بنانے کی ٹریننگ دے رہے ہیں وہ اس کا معاوضہ پانچ ہزار سے دس ہزار تک وصول کر رہے ہیں۔اگر آپ سیکھنے کے لئے سنجیدہ ہیںاور فیس کی ادائیگی سے بھی بچنا چاہتے ہیں تو پھر اپنے ذہن میں آنے والے ہر سوال کے جواب کے لئے ایک بار گوگل پر سرچ ضرور کریں۔ میں یقین سے کہ سکتا ہوں کہ آپ کو انشاءاللہ ضرور کامیابی حاصل ہوگی۔ میں نے دو سال پہلے اوڈیسک پر اکاﺅنٹ بنایا تھا اور ہر قسم کی رہنمائی گوگل سے اور اوڈیسک کے ہیلپ کے سیکشن سے حاصل کی تھی۔
جب آپ اپنے پراجیکٹ کو مکمل کر کے کلائنٹ کے حوالے کر دیتے ہیں تو کلائنٹ اس کام کا معاوضہ آپ کے اکاﺅنٹ میں منتقل کر دیتا ہے۔ اوڈیسک سے ہونے والی آمدن پر اوڈیسک والے آپ سے دس فیصد کمیشن وصول کرنے کے بعد باقی رقم کو آپ کے اکاﺅنٹ میں منتقل کر دیتے ہیں۔ پھر آپ اپنی اس حق حلال کی کمائی کو اپنے بینک اکاﺅنٹ میں ٹرانسفر کرکے نکلوا سکتے ہیں یا ویسٹرن یونین کے ذریعے حاصل کر سکتے ہیں۔ اوڈیسک کی رقم کی ادائیگی کے مزید طریقوں کو جاننے کے لئے ایک بار اوڈیسک کے پیمنٹ میتحڈ (Payment Method) کو اچھی طرح ضرور پڑھ لیں پھر آپ کو جو طریقہ مناسب لگے اسکے ذریعے رقم حاصل کر لیں۔ آخر میں تمام قارئین سے گزارش کروں گا کہ وہ انگلش زبان پر مہارت حاصل کرنے کی کوشش کریں کیونکہ انٹریٹ سے ڈالر کمانے کے لئے ، ہنر کے ساتھ ساتھ اچھی انگریزی بھی بہت ضروری ہے۔ اس وقت بہت سے لوگوں کا روزگار انٹرنیٹ سے وابستہ ہو چکاہے ا ور اگر آپ نے ابھی تک انٹرنیٹ سے پیسے کمانے کا آغاز نہیں کیا تو آپ کواس بارے میں سنجیدگی سے سوچنا ہوگا ۔ انٹر نیٹ سے پیسے کمانے کے مزید طریقوں کے بارے میں انشاءاللہ آئندہ شمارے میں بتایا جائے گا۔



Journalist, Android Application Developer and Web Designer. Writes article about IT in Roznama Dunya. I Interview Prominent Personalities & Icons around the globe.


One thought on “فری لانسر کی حیثیت سے انٹرنیٹ پر اپنے کرئیر کا آغاز کریں

Leave a Reply

Translate »